English   /   Kannada   /   Nawayathi

نئی تعلیمی پالیسی مسلمانوں کے لیے لمحہ فکریہ۔ انفا کے تین روزہ ورکشاپ کے آخری دن صدر انفا مولانا محمد الیاس ندوی کا فکر انگیز خطاب

share with us

بھٹکل 29 ستمبر 2020 (فکرو خبر نیوز) آزاد نگر فرینڈس اسوسی ایشن بھٹکل (انفا) کے زیر اہتمام تعلیمی ، سیاسی، سماجی،طبی،قانونی اور تجارتی رہنمائی کے لیے منعقدہ تین روزہ ورکشاپ کا آج آخری دن تھا جس میں سماجی خدمات اور تجارت کے مختلف گر حاضرین کے سامنے علماء ، دانشوران اور ماہرین نے پیش کئے۔
انفا کے صدر اور بانی و جنرل سیکرٹری مولانا ابوالحسن علی ندوی اسلامک اکیڈمی مولانا محمد الیاس ندوی نے ہندوستان میں مسلمانوں کے مسائل پر اپنی بات کہتے ہوئے کہا کہ ایسا دور ملک کی تاریخ میں نہیں آیا۔ مسلمانوں کے مسائل بہت سے ہیں۔ تعلیمی، سیاسی اور اقتصادی طور پر مسلمان کو سازش کے تحت کمزور کیاگیا۔
مولانا نے تعلیمی مسائل بیان کرتے ہوئے نئی تعلیمی پالیسی کے نقصانات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے اس کے سنگین نتائج بیان کرتے ہوئے کہا کہ یہ تعلیمی پالیسی اتنی خطرناک ہے کہ اس کو بیان نہیں کیا جاسکتا۔یہ تعلیمی پالیسی دراصل ہمیں ایمان سے ہٹانے کی سازشیں ہیں۔ اس کو پڑھنے کے بعد جس طرح کی چیزیں سامنے آرہی ہیں اس سے ملک کی اہم شخصیات اور ادارے بھی واقف نہیں ہیں۔ اس کے ذریعہ ہماری نسل کو ایک خاص رنگ میں رنگنے کی سازش کیا پوری تیاری ہوچکی ہے۔ 

​​مولانا علی میاں ندوی رحمۃ اللہ علیہ کے حوالے سے کہا کہ ایسی تعلیم سے جہالت ہی بہتر ہے۔ ایسا موقع اللہ نہ دکھائے کہ ہمیں آواز لگانی پڑے کہ اپنے بچوں کو جہالت میں رہنے دیں اور ایسی تعلیمی پالیسی سے دور رکھنے کے لئے اسکولوں سے نکال دیں۔

مولانا نے کہا کہ سیاسی طور پرکمزور کرنے کے لیے انہوں نے کچھ ایسے لوگوں کو کھڑا کیا جنہوں نے مسلمانوں کو تقسیم کردیا یا پھر پارلیمانی اور اسمبلی طور پر ایسے بانٹ دیا کہ ہم چاہ کر بھی اس میدان میں آگے نہیں بڑھ سکتے۔
اقتصادی طور پر ہمیں اس طرح کمزور کردیا کہ جن میدانوں میں ہماری تجارت تھی اس پر ایسے روڑے اٹکائے کہ تجارت کرنا دشوار سے دشوار تر ہوگیا جس کی کئی ایک مثالیں پیش کی جاسکتی ہیں۔
مولانا نے آخر میں تجارتی میدان میں آگے بڑھنے کے کئی طریقے بیان کئے اور بتایا کہ قیمت خرید پر فروخت کرتے ہوئے بھی کس طرح فائدہ حاصل کیا جاسکتا ہے۔
انفا کے جنرل سیکرٹری مولانا محمد انصار ندوی مدنی نے اسلام میں سماجی خدمات کی اہمیت پر اپنی بات رکھتے ہوئے کہا کہ ضرورتوں کو پورا کرنے کا نام ہی سماجی خدمات ہے۔ضرورت کے موقع پر ہم مدد کرنے والے بن جائیں چاہے مدد جانور ہی کی کیوں نہ ہو۔ مولانانے اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی زندگی کے کئی واقعات کی روشنی میں سماجی خدمات میں آگے بڑھنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یہ بھی ایک اہم ترین عبادت ہے۔ اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی پوری زندگی اسی کے گرد گھومتی ہے۔ مولانا نے بتایا کہ خدمت صرف انسانوں ہی کی نہیں بلکہ جانوروں تک کی ضرورتیں پوری کرنے کا خیال رکھا جائے۔ کئی واقعات ایسے ہمارے سامنے ہیں کہ جانوروں کی ضروریات پوری کرنے پر اللہ نے مغفرت فرمائی۔ انہوں نے سماجی خدمات کے میدان میں آگے آکر عوام کی بلا تفریق مذہب و ملت خدمت کرنے کی بات کہی۔
ناظم جامعہ اسلامیہ بھٹکل اور سرپرست انفا جناب ماسٹر شفیع صاحب نے کئی باتوں کی طرف توجہ مبذول کراتے ہوئے ورکشاپ سے حاصل ہونےوالے فوائد کا جائزہ لینے اور نمازوں کی پابندی کی طرف بھی توجہ مبذول کرائی۔
تجارتی میدان میں رہنمائی کرتے ہوئے بھٹکل کے مشہور تاجر جناب اشتیاق رکن الدین نے کہا کہ تعلیم سے ہمیں معلومات حاصل کرنی چاہیے، اگر تعلیم صرف امتحان پاس کرنے کےلئے ہے تو پڑھائی کا کچھ حاصل نہیں ہے۔ انہوں نے تجارتی میدان میں آگے بڑھنے کے طریقے بیان کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنی تجارت کا جائزہ لیتے رہنا چاہئے اور محنت کرنی چاہئے ، آپ جتنی محنت کریں گے اس کے نتائج بھی سامنے آئیں گے۔
اسی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے ابھرتے تاجر جناب حافظ صواف جاکٹی نے کہا کہ ہمارے تعلیمی نظام میں ہی خود کفیل کرنے کے بجائے ملازمتیں حاصل کرنے کا لالچ دیا جاتا ہے۔
تجارتی میدان میں آگے بڑھنے کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہوتا کہ آپ کسی کے تحت نہیں ہوتے، اور جب چاہے آپ اپنا پروگرام ترتیب دے سکتے ہیں۔ تجربہ کے فوائد میں یہ بھی ہے کہ آپ کو ہر فیلڈ کا تجربہ حاصل ہوتا ہے۔
عبد المہیمن سعدا نے موجودہ دور میں میڈیا کی اہمیت اور اس سے حاصل ہونے والے فوائد بتاتے ہوئے کہا کہ ہمیں میڈیا کی پوری چیزیں قبول نہیں کرنی چاہیے کیونکہ آج کی میڈیا میں پیش کی جانے والی اکثر باتیں جھوٹ پر مبنی ہوتی ہیں۔ سوشیل میڈیا کے استعمال کو بہتر سے بہتر بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ میڈیا کے میدان میں آگے آنا چاہیے۔
پروگرام کے آخر میں دلچسپ انفا کوئز میں صحیح جواب دینے والوں کو انعامات سے نوازا گیا۔

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا