English   /   Kannada   /   Nawayathi

لداخ کو یونین ٹریٹری تسلیم کرنے سے چین کا انکار

share with us

:29ستمبر 2020(فکرو خبر/ذرائع)چین کی وزارت خارجہ نے منگل کو کہا کہ چین، لداخ کو مرکزی علاقے (یونین ٹریٹری) کے طور پر تسلیم نہیں کرتا ہے اور اس علاقے میں بھارت کی جانب سے تعمیرات کی مخالفت کرتا ہے۔

پیپلز ڈیلی چائنا، جسے چینی حکومت کا ایک مخاطب اخبار سمجھا جاتا ہے، نے چینی وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بِن کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ: "چین، بھارت کے 'غیر قانونی' طور پر قائم کردہ نام نہاد مرکزی علاقہ لداخ کو تسلیم نہیں کرتا ہے، اور فوج کے لئے متنازعہ سرحدی علاقوں میں فوجی مقاصد کے لئے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر کی مخالفت کرتا ہے۔'

ترجمان کے بیان میں کہا گیا ہے کہ 'چین اور بھارت کے مابین حالیہ اتفاق رائے کے مطابق کسی بھی فریق کو سرحدی علاقوں میں ایسی کوئی کارروائی نہیں کرنی چاہئے جو حالات کو پیچیدہ بنائے، تاکہ صورت حال کو بہتر کرنے کے لئے دونوں فریقوں کی کوششیں متاثر نہ ہو۔

چینی تبصرا ایک ایسے وقت سامنے آیا ہے جب بھارتی فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل آر کے ایس بھدوریا نے کہا کہ لائن آف ایکچول کنٹرول پر موجودہ صورتحال "تشویشناک" ہے۔

یاد رہے کہ لداخ 2019 تک ریاست جموں و کشمیر کا ایک حصہ تھا۔ گذشتہ برس 5 اگست کو مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کر کے ریاست کو دو مرکزی علاقوں میں تقسیم کردیا۔

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا