دیکھ بال نہیں کر سکتے تو تو پھر تاج محل کو منہدم کیوں نہیں کردیتے؟سپریم کورٹ کا سوال

share with us

نئی دہلی:11؍جولائی2018(فکروخبر/ذرائع)بھارتی سپریم کورٹ نے تاج محل کی دیکھ بھال کے معاملے میں حکومت کی لاپرواہی کا سخت نوٹ لیتے ہوئے کہا کہ 'یا تو ہم تاج محل کو بند کردیں گے یا آپ اسے منہدم کردیں'۔سپریم کورٹ نے تاج محل کی مناسب دیکھ بھال کے حوالے سے ایک درخواست پر سماعت کے دوران مرکزی حکومت پر سخت نکتہ چینی کی۔سپریم کورٹ نے سماعت کے دوران کہا کہ 'ٹی وی ٹاور کی شکل میں نظر آنے والے ایفل ٹاور کو دیکھنے کے لیے 80 ملین سیاح جاتے ہیں۔ ہمارا تاج محل تو اس سے بھی زیادہ خوبصورت ہے۔ اگر آپ اس کی مناسب دیکھ بھال کرتے تو بیرونی زر مبادلہ کا مسئلہ حل ہوجاتا'۔سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت سے سوال کیا کہ 'کیا آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی لاپرواہی کی قیمت پورا ملک چکائے؟'۔قبل ازیں سپریم کورٹ نے تاج محل کی مناسب دیکھ بھال نہ کرنے پر محکمہ آثار قدیمہ پر بھی سخت تنقید کی۔رواں برس مئی میں سپریم کورٹ میں ایک درخواست داخل کی گئی جس میں کہا گیا کہ آگرہ میں آلودگی کی وجہ سے تاج محل کی عمارت  کا رنگ سرخ ہوچکا ہے۔

 

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا