کرناٹک بجٹ :اپنے پہلے بجٹ میں سی ایم کمار سوامی نے کسانوں کا 34000کروڑ کا قرضہ معاف کر دیا

share with us

بنگلور:05جولائی2018(فکروخبر/ذرائع)کرناٹک کے وزیر اعلی ایچ ڈی کمارسوامی نے اپنا انتخابی وعدہ پورا کر دیا ہے۔ جمعرات کو پیش کئے گئے بجٹ میں انہوں نے 34،000 کروڑ روپے کے کسانوں کے قرض معاف کر دئیے ہیں۔ کمارسوامی ریاستی حکومت میں وزارت خزانہ بھی سنبھالتے ہیں۔ اسمبلی میں بجٹ تقریر کے دوران انہوں نے کہا کہ پہلے مرحلے میں گزشتہ 31 دسمبر تک کے قرضوں کو معاف کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

كمارسوامی نے کہا، "کسانوں کے کھاتے میں قرض کی رقم یا 25،000 روپے، جو بھی کم ہے، کریڈٹ کرنے کا فیصلہ لیا ہے۔"

انہوں نے بتایا کہ قرض معافی کی حد 2 لاکھ روپے تک محدود کیوں ہے۔ كمارسوامی نے کہا، "بڑے کسانوں کے پاس 40 لاکھ روپے کا قرض ہے۔ اونچی قیمت والے فصل قرض کو ختم کرنے کا حق نہیں ہے، اس لئے میں نے قرض کی رقم کو 2 لاکھ روپے تک محدود کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کسانوں کو اس سے 4،000،000 کروڑ روپے کا فائدہ ہوگا۔ '

اپنی انتخابی مہم کے دوران کمارسوامی نے وعدہ کیا تھا کہ اگر جے ڈی ایس حکومت آئی تو تمام قرضوں کو معاف کردیا جائے گا۔ گزشتہ مئی میں کانگریس کے ساتھ مخلوط حکومت بنانے کے بعد قرض معافی ان کے اور کانگریس کے درمیان تنازعہ کی وجہ بن گئی تھی۔

 

 

کرناٹک بجٹ کی اہم باتیں:

  • کسانوں کے لئے 34000 کروڑ روپے کی قرض معافی کا اعلان، ہر کسان کا 2 لاکھ روپے کا قرض معاف ہوگا۔
  • کسانوں کو 31 دسمبر 2017 تک لئے گئے قرض پر اس اسکیم کا فائدہ ملے گا۔
  • وزیر اعلیٰ کماراسوامی نے بتایا کہ یہ قرض معافی کا پہلا مرحلہ ہے۔
  • وزیر اعلیٰ کے اس اعلان کا فائدہ تقریباً 25 ہزار کسانوں کو حاصل ہوگا۔
  • اندرا کینٹین، انّا بھاگیہ منصوبے جاری رہیں گے اور انہیں مزید بہتر بنایا جائے گا۔
  • کانگریس کی سابقہ حکومت کی تمام فلاحی اسکیمیں جاری رہیں گی۔
  • بنگلورو میں پیریفیرل رنگ روڈ تعمیر ہوگا۔ اس کی لاگت 11950 کروڑ روپے ہوگی۔
  • حکومت نے خصوصی مقاصد والی گاڑیوں کو منظوری فراہم کر دی ہے۔
  • بنگلورو جھیل کی بہتری کے لئے 50 کروڑ روپے کا فنڈ جاری۔
  • شراب پر 4 فیصد کا مصنوعات ٹیکس بڑھایا گیا ہے، اس سے حکومت کو ایک ہزار کروڑ کی اضافی آمدنی ہوگی۔
  • بیلگاوی، کلبرگی اور میسور میں سپر اسپیشلٹی اسپتال کھولے جائیں گے۔ ان اسپتالوں میں ہارٹ، کینسر اور دیگر بیماریوں کا علاج کیا جائے گا۔
  • گدگ، کوپّل، چامراج نگر اور ہاسن ضلع میں 450 بستروں والے اسپتال کھولے جائیں گے، اس کے لئے 200 کروڑ روپے مہیا کرائے جائیں گے۔
  • ڈیزل کے ٹیکس میں 2 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے۔
  • ٹیکس میں اضافہ کے بعد ڈیزل کے داموں میں 1.20 روپے فی لیٹر کا اضافہ اور پٹرول کے داموں میں 1.15 روپے فی لیٹر کا اضافہ ہوگا۔

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا