ملک کی کئی ریاستوں میں نوٹ بندی جیسے حالات ،کئی ریاستوں میں اے ٹی ایم کے باہر لگی لمبی قطاریں

share with us

نئی دہلی:17؍اپریل2018(فکروخبر/ذرائع)ملک میں ایک مرتبہ پھر نوٹ بندی جیسی صورت حال نظر آ رہی ہے۔ ملک کی کئی ریاستوں اور متعدد شہروں میں اے ٹی ایمز سے کیش کی دستیابی نہیں ہو رہی ہے۔کچھ ایسے بھی مقامات ہیں جہاں اے ٹی ایم سے ٹرانزکشن کرنے پر موبائل پر میسیج تو آ رہا ہے لیکن کیش دستیاب نہیں ہو رہا ہے۔قومی دارالحکومت دہلی سمیت بہار، جھارکھنڈ، اتر پردیش، مدھیہ پردیش، گجرات اور تلنگانہ جیسی ریاستوں کے کئی شہروں میں حالات انتہائی ابتر ہیں۔ عوام کیش کی کمی کے باعث پریشانی ہو رہی ہے۔دوسری جانب ان ریاستوں میں بینکوں کی برانچ میں کیش کی دستیابی نہیں ہے، کیش کی قلت نے عوام کے اندر تشویش کا ماحول پیدا کر دیا ہے۔جنوبی شہر حیدرآباد کے کئی علاقوں میں اے ٹی ایم سے کیش دستیاب نہیں ہو رہا ہے اور یہ سلسلہ گذشتہ ڈیڑھ مہینے سے جاری ہے۔این ڈی ٹی وی کی خبر کے مطابق شمالی بہار کے زیادہ تر علاقوں میں اے ٹی ایمز اور بینکوں کی برانچز میں کیش کی کمی نے حالات ابتر کر دیے ہیں۔ گجرات میں کیش کی کمی لوگوں کی پریشانی کا باعث بن گئی ہے۔گجرات میں پہلے یہ مسئلہ ایک شہر تک محدود تھا لیکن آہستہ آہستہ کیش کی قلت نے پوری ریاست کو متاثر کر دیا ہے۔دہلی کے حالات بھی کچھ بہتر نہیں ہیں، کئی علاقوں کے اے ٹی ایمز اور بینک برانچز میں کیش موجود نہیں ہے جس کے باعث لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ادھر وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے اس معاملے پر خانہ پوڑی کرتے ہوئے کہا ہے کہ 'کیش کی قلت کا جائزہ لیا جا رہا ہے، بینکوں کے پاس مناسب مقدار میں رقم موجود ہے۔ انھوں نے کہا کہ کیش کی زیادہ مانگ کی وجہ سے یہ پریشانی آئی ہے، جس کو دو سے تین روز کے اندر حل کر لیا جائے گا'۔

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا