کٹوعہ عصمت ریزی معاملہ:متاثرہ کا کیس لڑ رہی وکیل دیپیکا راجاوت کو مل رہی ہیں دھمکیاں

share with us

جموں :16؍اپریل2018(فکروخبر/ذرائع) کٹھوعہ گینگ ریپ کی متاثرہ کی موکل کا کہنا ہے کہ اس مقدمے کو ترک کرنے کے لیے مسلسل ان پر دباؤ بنایا جارہا ہے۔دیپکا سنگھ راجاوت نے کہا کہ مجھے یہ کیس چھوڑنے کے لیے مسلسل دھمکیا موصول ہو رہی ہیں۔ گنہوں نے کہا کہ مجھے جان سے مارنے کی بھی دھمکی دی جا رہی ہے۔دیپیکا راجاوت نے اس سلسلے میں سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں یہ بتانے کے لیے سپریم کورٹ جاؤنگی کہ میری جان کو خطرہ ہے۔ دیپیکا راجاوت نے بتایا کہ 'میں نہیں جانتی ہوں کہ کب تک زندہ ہوں۔ میرا کبھی بھی ریپ کیا جا سکتا ہے۔ بھیڑ میں مجھے مار سکتے ہے۔ مجھے نقصان پہنچایا جاسکتا ہے۔ مجھے گزشتہ روز دھمکی ملی تھی۔ وہ کہہ رہے تھے وہ مجھے نہیں چھوڑیں گے۔ میں پیر کو سپریم کورٹ جا رہی ہوں۔ یہ بتانے کے لیے کہ میری جان کو خطرہ ہے۔'

    واضح رہے کہ اس سے قبل بھی انہوں نے بتایا تھا کہ انہیں مسلسل دھمکیاں مل رہی ہیں اور وہ اس کیس کو جموں کشمیر سے باہر منتقل کرنا چاہتی ہیں، تاکہ کوئی دباؤ نہ رہے اور متاثرہ کو انصاف مل سکے۔ دیپکا نے کہا تھا کہ وہ آخری دم تک لڑیں گی اور متاثرہ کو انصاف ضرور دلائیں گی۔ 
 

Prayer Timings

Fajr فجر
Dhuhr الظهر
Asr عصر
Maghrib مغرب
Isha عشا